روزه اور قرآن

  • 24 اپریل 2022
روزه اور قرآن

 

رمضان  كے رروزے ركھنا، اسلام كے پانچ  بنيادى   اركان ميں سے ايك ركن ہے،  يہ  ہر مسلمان بالغ ،عاقل ، صحت مند، مقيم، مردوعورت پر فرض ہے، جس كى ادائيگى كے ذريعہ  خواہشات كو قابو ميں  ركھنے كا ملكہ   پيدا ہوتا ہے، اور تقوى ہى  كى بنياد ،جيسا كہ الله تعالى نے قرآن كريم  ميں ارشاد فرمايا:" اے ایمان والو! تم پر روزے فرض کیے گئے ہیں جس طرح تم سے پہلے لوگوں پر فرض کیے گئے تھے، تاکہ تم متقی بن جاؤ"{البقرۃ: ۱۸۳}رمضان اور روزه كے  بنيادى مقاصد ميں  تقوى مشتركہ ہے۔

اسى مہينہ ميں قرآن پاك نازل ہوا، ارشاد بارى  ہے :" شَہْرُ رَمَضَانَ الَّذِیْ أُنْزِلَ فِیْہِ الْقُرْآنُ"{البقرۃ:۱۸۵} یعنی (رمضان كا مہينہ  وه ہے جس ميں قرآن  كريم  نازل  ہوا"،   اسى ماه ميں  مبارك  ليلة القدر ہے جو ہزار مہينوں سے بہتر رات ہے، اس مہينے كے روزے  اللہ تعالى نے فرض كيے ہيں، اور روزه ركھنا  بھى نماز، زكوة اور حج وعمره كى طرح ايك نہيايت  اہم عبادت ہے۔

 

    قرآن كريم اور   رمضان  كے درميان چند مشترك خصوصيات:

(1) قرآن اور رمضان کی پہلی اہم مشترک خصوصیت تقویٰ ہے، جیساکہ قرآن کریم کی آیات کی روشنی میں ذکر کیا گیا  ۔

(2) دوسری مشترک خصوصیت شفاعت ہے، نبى  كريم ﷺ نے  فرمايا:” روزه اور قرآن قيامت كے دن بندے كى سفارش كريں گے، روزه كہے گا: اے ميرے رب  ميں  نے اس  بندے كو  دن  كے وقت  كھانے پينے  اور  حرام كاموں سے  روكے ركھا،پس تو ميرى طرف سے سفارش قبول فرما،قرآن كہے گا: ميں نے اس کو رات کے وقت سونے سے روک دیا تھا ، پس تو اس كے بارے میں میری سفارش قبول فرما ، سو ان دونوں کی سفارش قبول کی جائے گی ۔

(3) تيسرىخصوصیت جو رمضان اور قرآن دونوں میں مشترک طور پر پائی جاتی ہے، وہ قربِ الہى  ہے، یعنی اللہ تعالى کے کلام کی تلاوت کے وقت اللہ  تعالى سے خاص قرب حاصل ہوتا ہے، ایسے ہی روزہ دار کو بھی اللہ  تعالى کا خاص قرب حاصل ہوتا ہے کہ روزہ کے متعلق حدیثِ قدسی میں اللہ  تعالى کا ارشاد ہے کہ:" میں خود ہی روزہ کا بدلہ ہوں"۔ 

روزے میں انسان بھوکا پیاسا رہتا ہے تو اسے ان لوگوں کی تکلیفوں کا احساس ہوتا ہے جن کی زندگی فاقوں میں گزرتی ہے اور اس کے اندر ایسے لوگوں کے لیے ہمدردی کے جذبے پیدا ہوتے ہیں اور وہ ایثار و قربانی کے جذبوں سے سرشار ہو کر اپنی طاقت کے مطابق ان کی مدد و تعاون کرتا ہے ، لہذا ہمیں اس ماہ رمضان میں اپنی اسلامی تربیت پر خاص توجہ دینے کی ضرورت ہے اور ایک مضبوط امت بن کر اپنی ذمہ داریوں کو اٹھانا ہے۔

 

 

 

 

Print

Please login or register to post comments.

 

اسلام میں شہید كا مقام و مرتبہ
پير, 16 مئی, 2022
شہید، اس پاکیزہ روح کا مالک ہے جس نے اللہ تعالیٰ کے کلمے کو سربلند کرنے کےلیے اپنے آپ کو قربان کیا۔ شہادت ایک ایسا اعزاز ہے جو صرف وہی حاصل کر سکتا ہے جس کے دل میں ایمان ہو۔ اسی وجہ سے اللہ تعالیٰ نے شہید کو بے شمار اعزازات سے نوازا ہے۔ قرآن پاك...
الازہر الشريف مصر كے مغربى سینائی میں واٹر لفٹنگ اسٹیشن پر دہشت گردانہ حملے کی شديد‎ ‎مذمت کرتا ہے
اتوار, 8 مئی, 2022
    الازہر الشريف ہفتہ كے روز ہونے والے دہشت گردانہ حملے کی شدید مذمت کرتا ہے جس ميں مغربى سینائی میں ایک واٹر ‏لفٹنگ اسٹیشن کو نشانہ بنایا گيا اور جس کے نتیجے میں ایک افسراور10 سپاہی جاں بحق اور پانچ زخمی ہوئے تھے۔ الازہر...
روزه اور قرآن
اتوار, 24 اپریل, 2022
  رمضان  كے رروزے ركھنا، اسلام كے پانچ  بنيادى   اركان ميں سے ايك ركن ہے،  يہ  ہر مسلمان بالغ ،عاقل ، صحت مند، مقيم، مردوعورت پر فرض ہے، جس كى ادائيگى كے ذريعہ  خواہشات كو قابو ميں  ركھنے كا ملكہ...
123456810Last

ازہرشريف: چھيڑخوانى شرعًا حرام ہے، يہ ايك قابلِ مذمت عمل ہے، اور اس كا وجہ جواز پيش كرنا درست نہيں
اتوار, 9 ستمبر, 2018
گزشتہ کئی دنوں سے چھيڑ خوانى كے واقعات سے متعلق سوشل ميڈيا اور ديگر ذرائع ابلاغ ميں بہت سى باتيں كہى جارہى ہيں مثلًا يه كہ بسا اوقات چھيڑخوانى كرنے والا اُس شخص كو مار بيٹھتا ہے جواسے روكنے، منع كرنے يا اس عورت كى حفاظت كرنے كى كوشش كرتا ہے جو...
فضیلت مآب امام اکبر کا انڈونیشیا کا دورہ
بدھ, 2 مئی, 2018
ازہر شريف كا اعلى درجہ كا ايک وفد فضيلت مآب امامِ اكبر شيخ ازہر كى سربراہى  ميں انڈونيشيا كے دار الحكومت جاكرتا كى ‏طرف متوجہ ہوا. مصر کے وفد میں انڈونیشیا میں مصر کے سفیر جناب عمرو معوض صاحب اور  جامعہ ازہر شريف كے سربراه...
شیخ الازہر کا پرتگال اور موریتانیہ کی طرف دورہ
بدھ, 14 مارچ, 2018
فضیلت مآب امامِ اکبر شیخ الازہر پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب ۱۴ مارچ کو پرتگال اور موریتانیہ کی طرف روانہ ہوئے، جہاں وہ دیگر سرگرمیوں میں شرکت کریں گے، اس کے ساتھ ساتھ ملک کے صدر، وزیراعظم، وزیر خارجہ اور صدرِ پارلیمنٹ سے ملاقات کریں گے۔ ملک کے...
12345678910Last

روزه اور قرآن
  رمضان  كے رروزے ركھنا، اسلام كے پانچ  بنيادى   اركان ميں سے ايك ركن ہے،  يہ  ہر مسلمان بالغ ،عاقل ، صحت...
اتوار, 24 اپریل, 2022
حجاب اسلام كا بنيادى حصہ
جمعه, 25 مارچ, 2022
اولاد کی صحیح تعلیم
اتوار, 6 فروری, 2022
اسلام ميں حقوقٍ نسواں
اتوار, 6 فروری, 2022
12345679Last

دہشت گردى كے خاتمے ميں ذرائع ابلاغ كا كردار‏
                   دہشت گردى اس زيادتى  كا  نام  ہے جو  افراد يا ...
جمعه, 22 فروری, 2019
اسلام ميں مساوات
جمعرات, 21 فروری, 2019
دہشت گردى ايك الميہ
پير, 11 فروری, 2019
12345678910Last