دہشت گردى كے خاتمے ميں ذرائع ابلاغ كا كردار‏

  • 22 فروری 2019
دہشت گردى كے خاتمے ميں ذرائع ابلاغ  كا كردار‏

                   دہشت گردى اس زيادتى  كا  نام  ہے جو  افراد يا  تنظيمو ں  يا ملكوں  كى جانب سے انسان كے دين، جان، عقل، مال، اور عزت  وآبرو  كے خلاف  كى جاتى ہے. اس ميں خوف زده كرنے، تكليف پہنچانے، دھمكانے، نا حق قتل كرنے اور ڈاكہ زنى  ورہزنى كى تمام صورتيں شامل ہيں، اسى طرح  تشدد اور دھمكى ، اور شدت  پسندى  كا ہر وه كام جو انفرادى يا اجتماعى طور پر  مجرمانہ منصوبے  كو نافذ  كرنے كے لئے  كيا جا ئے  اور جس كا مقصد  يہ  ہو  كہ لوگوں  كے دلوں ميں خوف پيدا  كيا جائے يا انہيں تكليف پہنچا كر ہر اساں كياجائے يا ان كى زندگى ، آزادى ،امن اور حالات  كو خطرے ميں ڈالا جائے۔

                 دہشت گردى كى مختلف صورتيں  ہيں ،مثلا ماحوليات كو  نقصان پہنچانا  يا عوامى  وذاتى مفادات  واملا ك كو ضائع اور برباد كرنا  اور  انہيں  خطره ميں ڈالنا، يہ تمام  چيزيں  زمين پر فساد مچانے   كى مختلف صورتيں ہيں جن سے اللہ  تبارك وتعالى منع فرماتا ہے،  اللہ تعالى كا ارشاد ہے: "وَلَا تَبْغِ الْفَسَادَ فِي الْأَرْضِ ۖ إِنَّ اللَّهَ لَا يُحِبُّ الْمُفْسِدِينَ" (اور ملک میں طالب فساد نہ ہو۔ کیونکہ خدا فساد کرنے والوں کو دوست نہیں رکھتا) [سورۂ قصص: 77]۔

                 آج كے زمانے ميں ميڈيا  ايك سب سے تيز اور قاتلانہ ہتھيار ہے اور  يہ ہى واحد وسيلہ ہے جس كےذريعہ دہشت گرد  اپنے شرائط،مطالبات  اور آراء كو دنيا كے سامنے  ركھ كراپنے وسائل  كى وضاحت كر سكتے ہيں، دہشت گرد  عناصر اپنے مقصد كے حصول كے لئے دو بنيادى عناصر كا سہارا ليتے ہيں: دہشت پھيلانا،اور مسئلہ تشہير كرنا،ان كا انحصار ميڈيا  پر ہوتا ہے،ميڈيا كسى دہشت  گردانہ واقعہ كو  نشر كر كے دہشت گردوں كو ہيرو كى شكل ميں  پيش كرتا  ہے، اور اس طرح وہ بعض  كمزور دل اور   ناعاقبت انديش  نوجوانوں كو ان كى تقليد كرنے اور ان كے راستے پر چلنے پر آمادہ كرتا ہے۔

                 ميڈيا ميں سے  انٹرنٹ  ان خطر ناك وسائل ميں سے ہے جو دہشت گردى كى آگ اور زہريلے افكار كو بھڑكاتا  ہے، اور اس كى چنگارى دن بہ دن بڑھتى ہى جا رہى ہے، دہشت گرد اسے  اپنے سياسى اور سماجى مقاصد كے لئےہتھيار كے طور پر  استعمال كرتے ہيں، تاكہ افراد وسماج ميں خوف ودہشت پھيلائى جا سكے۔ انٹرنٹ كے ذريعہدہشت   گرد  جماعتيں  آپس ميں ايك دوسرے سے ربط وضبط قائم ركھتى ہيں،اسى كے  ذريعہ ممالك اور افراد سے متعلق معلومات حاصل كرتى ہيں، تاكہ دہشت گردانہ حملوں كے راه  ہموار كر سكيں، اور نوجوانوں كو اكٹھا  كر كے ان كے درميان  اپنے افكار ونظريات پھيلا  سكيں،اور انہيں اپنے گھٹيا مقاصد  كے ليے  استعمال كرسكيں۔

                دہشت گردى كے خاتمے ميں ميڈيا  كا كردار بہت اہم ہے، اردو ميں ميڈيا كو " ذرائع ابلاغ" بهى كہا جاتا  ہے، اس كا مطلب يہ ہوا كہ يہ دوسروں تك پيغامات پہنچانے كا وسيلہ ہےان كو خبردار كرنے كا مصدر ہے ،  ان كو سمجهانے كا طريقہ ہے اور  علم ومعرفت كى نشر واشاعت كا بهى، يہ تبليغ كا ذريعہ ہے ، ليكن افسوس يہ ہے كہ اس دور ميں ذرائع ابلاغ  ہلا كت خيز ہتھياروں اور چير پھاڑنے والے پنجوں ميں شمار كيا جاتا ہے، جن كے  ذريعہ صرف نوجوانوں كو نہيں بلكہ قوموں كو بہكايا جاتا ہے اور ان كے افكار اور رجحانات  كو ايسى دہشت گردانہ سوچ كى طرف تيزى سے لے جائے جاتے ہيں جوٹى وى چينلوں، انٹر نيٹ اور فورم كے  ذريعہ اپنے تير  چلاتى ہے، اور نوجوانوں  كو تشدد اور جرم كے جالوں ميں پھانس ليتى ہے۔ اسى لئے  امانت دار  ذرائع ابلاغ  سے ہمارى اميد ہے كہ وه اپنے اس اہم كردار كو اچهى طرح  پہچانيں اور اس كو  مكمل امانت دارى اور سچائى سے ادا كريں، كسى بهى قوم كو بيدار كرنے ميں علم ومعرفت كا بہت اہم كردار ہے اور ميڈيا كے ذريعہ حقيقى اور مثبت معلومات كو پہنچا كر اپنے نو خيز نسل كى بيدارى ميں اچها كردار ادا كرنا  اس ميدان ميں كام كرنے والے ہر فرد كا اولين فرض ہے۔ 

 

Print

Please login or register to post comments.

 

نیوزی لینڈ كى مسجد ميں نمازيوں پر خوفناك دہشتگردانہ حملے كے بارے ميں فضيلتِ مآب شيخ الازہرڈاكٹر احمد الطيب كا بيان

نمازِ جمہ كے دوران نيوزيلينڈ كے  كرائسٹ چرچ ميں ايك  مسجد پر  دہشت گرد حملہ   كى خبروں كو ميں نہايت  غم واداسى سے ديكھ رہا ہوں،جس كے نتيجہ ميں   پچاس افراد ہلا ك اور  اتنى ہى تعداد ميں  لوگ زخمى...

دہشت گردى كے خاتمے ميں ذرائع ابلاغ كا كردار‏

                   دہشت گردى اس زيادتى  كا  نام  ہے جو  افراد يا  تنظيمو ں  يا ملكوں  كى جانب سے انسان كے دين، جان، عقل، مال، اور عزت  وآبرو  كے...

اسلام ميں مساوات

                   مساوات کا مطلب ہے " برابرى"سارے انسانوں کے حقوق برابر ہیں ، ان کا اپنا مقام ہے اور ان کے لیےیکساں مواقع فراہم ہیں،  کوئی شخص اپنے خاندان، قبیلہ، وغیرہ کی وجہ سے...

اسلام اور بنیادی انسانی حقوق

                       دنيا ميں ہر انسان كے حقوق بهى ہوتے ہيں اور واجبات بهى، وه ليتا ہے، لينا جانتا ہے اور اسى طرح دستورِ الہى اور انسانى  كو مدِّ نظر ركهتے ہوئے اس كو دينا بهى آنا...

123457910Last

ازہرشريف: چھيڑخوانى شرعًا حرام ہے، يہ ايك قابلِ مذمت عمل ہے، اور اس كا وجہ جواز پيش كرنا درست نہيں
اتوار, 9 ستمبر, 2018
گزشتہ کئی دنوں سے چھيڑ خوانى كے واقعات سے متعلق سوشل ميڈيا اور ديگر ذرائع ابلاغ ميں بہت سى باتيں كہى جارہى ہيں مثلًا يه كہ بسا اوقات چھيڑخوانى كرنے والا اُس شخص كو مار بيٹھتا ہے جواسے روكنے، منع كرنے يا اس عورت كى حفاظت كرنے كى كوشش كرتا ہے جو...
فضیلت مآب امام اکبر کا انڈونیشیا کا دورہ
بدھ, 2 مئی, 2018
ازہر شريف كا اعلى درجہ كا ايک وفد فضيلت مآب امامِ اكبر شيخ ازہر كى سربراہى  ميں انڈونيشيا كے دار الحكومت جاكرتا كى ‏طرف متوجہ ہوا. مصر کے وفد میں انڈونیشیا میں مصر کے سفیر جناب عمرو معوض صاحب اور  جامعہ ازہر شريف كے سربراه...
شیخ الازہر کا پرتگال اور موریتانیہ کی طرف دورہ
بدھ, 14 مارچ, 2018
فضیلت مآب امامِ اکبر شیخ الازہر پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب ۱۴ مارچ کو پرتگال اور موریتانیہ کی طرف روانہ ہوئے، جہاں وہ دیگر سرگرمیوں میں شرکت کریں گے، اس کے ساتھ ساتھ ملک کے صدر، وزیراعظم، وزیر خارجہ اور صدرِ پارلیمنٹ سے ملاقات کریں گے۔ ملک کے...
1345678910Last

عيد الفطر
     پيغمر اسلام ؐ جب ہجرت كر كے مدينہ آئے تو وہاں كے لوگ ايك سالانہ تہوار منايا كرتے تھے،  اس ميں كھيل تماشا ...
منگل, 4 جون, 2019
زكات
پير, 27 مئی, 2019
135678910Last

دہشت گردى كے خاتمے ميں ذرائع ابلاغ كا كردار‏
                   دہشت گردى اس زيادتى  كا  نام  ہے جو  افراد يا ...
جمعه, 22 فروری, 2019
اسلام ميں مساوات
جمعرات, 21 فروری, 2019
دہشت گردى ايك الميہ
پير, 11 فروری, 2019
135678910Last