نئى تاريخى دستاويز ات ... فلسطينى عوام كے خلاف قابض صہيونى جرائم كى گواه

صہيونى  اخبار"ہارٹس" نے   اپنے  گزشتہ ہفتہ وارضميمہ ميں   چند  تاريخى دستاويزات كے حوالے سے ايك رپورٹ  شائع كى،   يہ  دستاويزات- 1948ء سے  فلسطينى   زمين پر...

كهيل... تعارف اور ہم آہنگى

     مرصد الازہر برائے انسدادِ انتہا پسندى  نے  مصر ميں منعقد ہونے والے افريكان ورلڈ كپ كى مناسبت سے "كهيل ... تعارف اور ہم آہنگى" كے نام سے آج صبح ايك آگاہى  مہم  كا آغاز كيا،  جو 12 زبانوں...

انسانيت كے نام ايك دستاويز

     "انسانى بهائى چاره (اخوت) كى دستاويز" كہہ ديں يا "انسانيت كى  دستاويز"، شيخ الازہر اور وٹيكن كے پوپ نے چند مہينوں پہلے  فرورى ميں ايك عالمى اور تاريخى دستاويز پر دستخط كى، جس كا مقصد دنيا...

نیوزی لینڈ كى مسجد ميں نمازيوں پر خوفناك دہشتگردانہ حملے كے بارے ميں فضيلتِ مآب شيخ الازہرڈاكٹر احمد الطيب كا بيان

نمازِ جمہ كے دوران نيوزيلينڈ كے  كرائسٹ چرچ ميں ايك  مسجد پر  دہشت گرد حملہ   كى خبروں كو ميں نہايت  غم واداسى سے ديكھ رہا ہوں،جس كے نتيجہ ميں   پچاس افراد ہلا ك اور  اتنى ہى تعداد ميں  لوگ زخمى...

1345678910Last

شاہ بحرین کے استقبال کے دوران : ہم بحرینی قوم کی یکجہتی اور اس کی استقلالیت کی تایید کرتے ہیں اور اس کے اندرونی مسائل میں دخل اندازی نہ کرنے کی دعوت دیتے ہیں۔
جمعرات, 28 اپریل, 2016
شاہ بحرین : حقیقی اسلامی ثقافت کی حفاظت کے لۓ ازہر شریف کے کردار کی اہمیت کی تعریف بیان کرتے ہیں۔ آج فضیلت مآب امام اکبر نے شاہ بحرین "حمدین عيسى آل خلیفہ" اور ان کی رفقت میں موجود وفد کا استقبال کیا جو آج کل قاہرہ کے دورے پر ہیں۔...
امام اکبر کے مونستر شہر میں تاریخی ہال "السلام" کے دورے کے دوران: "معاشروں کے مابین امن وامان، انٹر ریلجس ڈائیلاگ سے شروع ہوتا ہے"
جمعرات, 17 مارچ, 2016
جرمن شہر مونستر کے میئر کی دعوت پر فضیلت امام اکبر شیخ ازہر اور مسلم علماء کونسل کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب  نے  تاریخی "السلام" ہال کا دورہ کیا جس میں 1648ء میں عقائدی جنگ کو ختم کرنے کے لۓ امن وسلام کے معاہدے پر...
مونسٹر یونیورسٹی میں امام اکبر کا خیر مقدم..
جمعرات, 17 مارچ, 2016
امام اکبر کچھ دیر بعد "مذاہب میں امن وامان کی بنیادیں" کے عنوان سے ایک تقریر پیش کریں گے۔ فضیلت امام اکبر شیخ ازہر اور مسلم علماء کونسل کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب  "مذاہب میں امن وامان کی بنیادیں" کے عنوان سے ایک...
First45679111213

ازہر شريف سے بيان

  • | منگل, 29 دسمبر, 2015

ازہر شريف اپنى دستاويزوں ميں آزادى اور خاص طور پر عقيده كى آزادى كے متعلق آنے جانے والے بيانات پر ان قرآنى نصوص كى بنياد پر تاكيد كرتا ہے  لا إكراه في الدين دین (اسلام) میں زبردستی نہیں ہے (سورة البقرة: 256) اور ارشاد بارى تعالى ہے لكم دينكم ولي دين  تم اپنے دین پر میں اپنے دین پر (سورة الكافرون: 6).
ازہر شريف داعش كى غير انسانى كاروائيوں جس ميں وه مسلمانوں اور غير مسلمانوں كا خون، مال اور عزت اپنے لئے حلال قرار ديتے ہيں كى سخت مذمت كرتا ہے اور اعلان كرتا ہے كہ غير مسلمانوں كو زبردستى اسلام ميں داخل كرانا يا عورتوں كو اغوا كر كے اُن كى عزت كو لوٹنا اور ا نكوغلام بنانا جبكہ اسلام ہى نے غلامى كو دنيا سے ختم كيا اور اُس كو دوباره منظر عام پر لانا ايك دينى، اخلاقى اور انسانى جرم ہے اور اسلام اور اُس كى روادار  اور معتدل شريعت كے بالكل خلاف ہے. ازہر شريف اس بات كى تاكيد كرتا ہے كہ اس تنظيم كو -شريعت كے نقطۂ نظر سے-جہاد كى دعوت دينے كا كوئى حق نہيں ہے اور نہ ہى  اس كو لوگوں  كوزبردستى اپنے مذہب چهڑوانے يا ترك كرانے كا حق ہے
ازہر شريف اس بات كى تاكيد كرتا ہے كہ كسى انسان كو زبردستى اپنى شناخت تبديل كرانے يا الشہادتين كہنے يا نماز پڑهنے يا اسلام كے دوسرے فرائض كى ادائيگى پر مجبور كرانے كا يہ مطلب نہيں يہ شخص اسلام ميں داخل ہوگيا ہے اور نہ ہى اِس سے اُس كے عقيدے ميں كوئى تبديلى آسكتى ہے بلكہ يہ اسلام كى شريعت ا ور اس كے احكام كے سراسر خلاف ہے. ازہر شريف ايك بار پهر تاكيد كرتا ہے كہ (مسلمانوں يا غير مسلمانوں) كے خون، آبرو  اور  اموال كو اپنے لئے حلال قرار دينے والا اسلام سے خارج ہوجاتا ہے

 

Print
Tags:
Rate this article:
No rating

Please login or register to post comments.

دہشت گردى كے خاتمے ميں ذرائع ابلاغ كا كردار‏
                   دہشت گردى اس زيادتى  كا  نام  ہے جو  افراد يا ...
جمعه, 22 فروری, 2019
اسلام ميں مساوات
جمعرات, 21 فروری, 2019
دہشت گردى ايك الميہ
پير, 11 فروری, 2019
1345678910Last