تعاون كى قيمت

                   "ايك ہاتھ سے تالى نہيں بجتى"، ايك نامور ضرب المثل ہے جو كہاوتيں عام طور پر زندگى كے تجربوں كے خلاصہ كو بيان كرتى ہيں، جسے انسان اپنى زندگى كے مختلف مراحل ميں حاصل كرتا...

انسان كون ہے‎!‎؟

                 انسان ہى اس پورى كائنات كا مركز اور محور ہے پس اس كائنات كى ہر چيز اس كے تابع ہے اور تمام اديان اسى كے لئے نازل ہوئے اور سارى آسمانى وحى كا مخاطب بهى وہى ہے،  قرآن كريم  كى...

اور لوگوں كو اچهى باتيں كہنا...‏

کلمہ... لفظ يا بات كى زمدارى ایک امانت ہے، اس کے کہنے والوں کو چاہئے کہ اس بارے میں اللہ تعالى سے اتنا ڈرے، جتنى اسکي اہمیت و عظمت ہے اور جتنى اسکي وجہ سے بڑا خیر وجود میں آتا ہے یا بھیانک تباہي،بلا شبہ کلمہ (بات) کى امانت اور اسکى ذمہ داریاں...

قتلِ مسلم ‏

               رسول اللهؐ نے فرمايا كہ:«جب كبهى كوئى كسى دوسرے كى طرف ہتهيار سے اشاره كرتا ہے تو فرشتے اس پر لعنت بهيجتے ہيں۔» يعنى اگر صرف اشاره كرنے سے يہ وعيد ہے كہ فرشتے لعنت كرتے ہيں تو جو...

First34568101112Last

ازہرشريف: چھيڑخوانى شرعًا حرام ہے، يہ ايك قابلِ مذمت عمل ہے، اور اس كا وجہ جواز پيش كرنا درست نہيں
اتوار, 9 ستمبر, 2018
گزشتہ کئی دنوں سے چھيڑ خوانى كے واقعات سے متعلق سوشل ميڈيا اور ديگر ذرائع ابلاغ ميں بہت سى باتيں كہى جارہى ہيں مثلًا يه كہ بسا اوقات چھيڑخوانى كرنے والا اُس شخص كو مار بيٹھتا ہے جواسے روكنے، منع كرنے يا اس عورت كى حفاظت كرنے كى كوشش كرتا ہے جو...
فضیلت مآب امام اکبر کا انڈونیشیا کا دورہ
بدھ, 2 مئی, 2018
ازہر شريف كا اعلى درجہ كا ايک وفد فضيلت مآب امامِ اكبر شيخ ازہر كى سربراہى  ميں انڈونيشيا كے دار الحكومت جاكرتا كى ‏طرف متوجہ ہوا. مصر کے وفد میں انڈونیشیا میں مصر کے سفیر جناب عمرو معوض صاحب اور  جامعہ ازہر شريف كے سربراه...
شیخ الازہر کا پرتگال اور موریتانیہ کی طرف دورہ
بدھ, 14 مارچ, 2018
فضیلت مآب امامِ اکبر شیخ الازہر پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب ۱۴ مارچ کو پرتگال اور موریتانیہ کی طرف روانہ ہوئے، جہاں وہ دیگر سرگرمیوں میں شرکت کریں گے، اس کے ساتھ ساتھ ملک کے صدر، وزیراعظم، وزیر خارجہ اور صدرِ پارلیمنٹ سے ملاقات کریں گے۔ ملک کے...
123468910Last

امام اکبر کے مونستر شہر میں تاریخی ہال "السلام" کے دورے کے دوران: "معاشروں کے مابین امن وامان، انٹر ریلجس ڈائیلاگ سے شروع ہوتا ہے"

  • | جمعرات, 17 مارچ, 2016

جرمن شہر مونستر کے میئر کی دعوت پر فضیلت امام اکبر شیخ ازہر اور مسلم علماء کونسل کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب  نے  تاریخی "السلام" ہال کا دورہ کیا جس میں 1648ء میں عقائدی جنگ کو ختم کرنے کے لۓ امن وسلام کے معاہدے پر دستخط کیا گیا تھا۔ شہر مونستر کے میئر لیفی مارکوس، ریلجس ڈائیلاگ کے کمیشن کے سربراہ بشپ ہانز یاشکی، مونستر یونیورسٹی کی رکٹر، چرچ کے چند رہنماؤں اور مقبول شخصیات نے امام اکبر کا استقبال کیا۔
جلسے کے آغاز میں مونستر کے میئر نے امام اکبر کا شہر اور تاریخی ہال میں خیر مقدم کیا۔ انہوں نے تاکید کی کہ یہ  ایک تاریخی دورہ ہے جس کو اس ہال کی تاریخ میں لکھا جائے گا۔ علاوہ ازیں شہر کے میئر نے "امن وامان" کے شہر سے بین العقائد امن وامان کی دعوت دیں۔
فضيلت مآب امام  اكبر   نےاپنى تقرير ميں   اس بات پر تاكيد كى كہ ہم سب كا كام اس جارى جنگوں اور تنازعات كى روك تهام ہے- قوموں كے درميان امن وشانتى كا نقطۂ آغاز انٹرريلجيس ڈائيلاگ سے ہوتا ہے- اورفضيلت مآب شيخ ازہر نے    اس بات كى وضاحت   كى ہے كہ اسلام اور عيسائيت دونوں امن وآمان اور محبت كے مذاہب ہيں-
    فضيلت مآب شيخ ازہر اورمسلم علما كونسل كےسربراه  ڈاكٹر احمد الطيب نے اپنے خطاب كے بعد  تاريخى ريكارڈ ميں چند الفاظ  لكهے،  جس كے دوران ہال ميں موجود حاضرين  نے  امام اكبر اوران کے ہمراہ وفد کا پر جوشى سے استقبال كيا –

 

Print
Tags:
Rate this article:
No rating

Please login or register to post comments.

دہشت گردى كے خاتمے ميں ذرائع ابلاغ كا كردار‏
                   دہشت گردى اس زيادتى  كا  نام  ہے جو  افراد يا ...
جمعه, 22 فروری, 2019
اسلام ميں مساوات
جمعرات, 21 فروری, 2019
دہشت گردى ايك الميہ
پير, 11 فروری, 2019
123468910Last