مياں بيوى كے درميان محبت اور ہمدردى

  • 2 نومبر 2017
مياں بيوى كے درميان  محبت اور ہمدردى

فرمانِ الہى ہے "اور ہر چيز كو ہم نے جوڑا جوڑا پيدا كيا ہے تاكہ تم نصيحت حاصل كرو" (سورهء ذاريات: ۴۹) اس آيت سے واضح ہوتا ہے كہ تخليقى اعتبارسے قاعده زوجيت ميں اس كائنات كى ہر جاندار اور بے جان چيز شامل ہے ليكن جاندار چيزوں ميں الله تعالى كى مشيت يہ ہے كہ وه باقى رہیں اور ان ميں اضافہ ہوتا رہے الله تعالى نے فرمايا ہے "اس كى نشانيوں ميں سے ہے كہ تمہارى ہى جنس سے بيوياں پيدا كيں تاكہ تم ان سے آرام پاؤ اس نے تمہارے درميان محبت اور ہمدردى قائم كر دى، يقينا غور وفكر كرنے والوں كے لئے اس ميں بہت سى نشانياں ہیں" (سورهء روم: ۲۱)

          اس سے معلوم ہوتا ہے كہ مياں بيوى كے ازدواجى تعلق ميں تين چيزيں بنيادى اہميت كى حامل ہیں اور وه نفسياتى سكون وراحت، مودت اور رحمت ہیں-

سكون كا  كيا مطلب ہے؟

          سكون كا مطلب "اطمينان" ہے، عربى كا يہ لفظ "سكينہ" سے  مشتق ہے، جسے قرآن كريم نے كئى بار اطمينان اور ذاتى امان كے مفہوم ميں ذكر كيا ہے .

مودت كے معنى ؟

          مودت كا  مطلب "محبت" ہے، اس سے مراد  مياں بيوى كے دلوں ميں محبت والفت كے جذبات ہیں ان جذبات واحساسات كو ايكـ نہايت  بلند مقام  حاصل ہے جو تعلق زوجيت كى عفت وحرمت اور تقدس كے لحاظ سے ان كو الله تعالى كى نشانيوں ميں شمار كرتى ہے-

Image

رحمت كيا ہے؟

          رحمت، اسلامى اقدار ميں سرِ فہرست ہے اور قران مجيد ميں بهى سب سے  زياده  اسى عظيم صفت كا ذكر آيا ہے، الله تعالى  كى پاك ذات سے بهى يہى صفت   كثرت سے منسوب  رہتى ہے.

          اگر ازوداجى تعلق ان اقدار پر استوار ہوں تو اس كا مطلب يہ ہے كہ الله تعالى كے نزديكـ اس ازدواجى تعلق  كا مقام و مرتبہ نہايت مقدس ہے، كيونكہ يہى انسانى معاشروں كے قيام كى بنياد ہے، لہذا اس تعلق اور رشتہ  كى توہین يا خلاف ورزى نہیں ہونى چاہئے جسے قرآن كريم نے "پختہ عہد" قرار ديا ہے، ايك ايسا عہد جس كى قوت سے معاشرے مضبوط بنتے ہيں اور جس كى پختہ بنياد ہى ايك اچهے اور روشن مستقبل كى ضامن ہے .

يہ  قلم نگارى انسان اور اقدار اسلامى تناظر ميں كى كتاب سے

 

Print

Please login or register to post comments.

 

لاک ڈاؤن کے دوران گھریلو تشدد !
بدھ, 13 جنوری, 2021
       قدرتی آفات اور خواتین پر تشدد کی اعلی شرحوں کے مابین قریبی وابستگی کسی ایک ملک سے منفرد نہیں ہے۔ لیکن یہ دنیا کے بہت سارے ممالک میں موجود ہے۔ اس موضوع پر تحقیقات کا مطالعہ کرنے كے بعد   ہمیں معلوم ہوتا ہے کہ...
"مذہبی آزادی۔۔ اسلام کا ایک بنیادی اصول”
اتوار, 10 جنوری, 2021
     کے عنوان سے الازہر_آبزرویٹری نے آج صبح ایک نئی ویڈیو جاری کی جس میں اس بات کی تصدیق کی گئی ہے کہ مذہبى_آزادى اسلام کے اہم ترین اصولوں میں سے ایک ہے اور جس کی تاکید واضح ‏طور پر قرآن كريم ميں: "لَا إِكْرَاهَ فِي...
کورونا وائرس کے مقابلہ کے لئے احتیاطی تدابیر کے حوالے سے الازہر الشریف کى سپریم علما کونسل کا بیان
منگل, 29 دسمبر, 2020
  -    مجاز ریاستی حکام کے ذریعہ طے شدہ احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا شرعا  واجب ہے۔ سپریم علما کونسل۔ -    جماعت کی نماز میں اور جمعہ كے  خطبہ سننے میں نمازیوں کے ما بین کچھ فاصلہ رکھنے سے صحتِ نماز میں کوئی...
1345678910Last

ازہرشريف: چھيڑخوانى شرعًا حرام ہے، يہ ايك قابلِ مذمت عمل ہے، اور اس كا وجہ جواز پيش كرنا درست نہيں
اتوار, 9 ستمبر, 2018
گزشتہ کئی دنوں سے چھيڑ خوانى كے واقعات سے متعلق سوشل ميڈيا اور ديگر ذرائع ابلاغ ميں بہت سى باتيں كہى جارہى ہيں مثلًا يه كہ بسا اوقات چھيڑخوانى كرنے والا اُس شخص كو مار بيٹھتا ہے جواسے روكنے، منع كرنے يا اس عورت كى حفاظت كرنے كى كوشش كرتا ہے جو...
فضیلت مآب امام اکبر کا انڈونیشیا کا دورہ
بدھ, 2 مئی, 2018
ازہر شريف كا اعلى درجہ كا ايک وفد فضيلت مآب امامِ اكبر شيخ ازہر كى سربراہى  ميں انڈونيشيا كے دار الحكومت جاكرتا كى ‏طرف متوجہ ہوا. مصر کے وفد میں انڈونیشیا میں مصر کے سفیر جناب عمرو معوض صاحب اور  جامعہ ازہر شريف كے سربراه...
شیخ الازہر کا پرتگال اور موریتانیہ کی طرف دورہ
بدھ, 14 مارچ, 2018
فضیلت مآب امامِ اکبر شیخ الازہر پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب ۱۴ مارچ کو پرتگال اور موریتانیہ کی طرف روانہ ہوئے، جہاں وہ دیگر سرگرمیوں میں شرکت کریں گے، اس کے ساتھ ساتھ ملک کے صدر، وزیراعظم، وزیر خارجہ اور صدرِ پارلیمنٹ سے ملاقات کریں گے۔ ملک کے...
1234567810Last

12345679Last

بیت المقدس اور الازہر الشریف ‏
"میری تجویز ہے کہ 2018ء کو قدس شریف کا سال قرار دیا جاۓ، جس میں بیت المقدس کے تعارف، اہلِ قدس کی مادی و معنوی حمایت اور اس سے متعلق ...
اتوار, 28 جنوری, 2018
اسلام ميں شہريت كا مفہوم ‏
منگل, 17 اکتوبر, 2017
اسلام اور جنگ
اتوار, 15 اکتوبر, 2017
First3456791112