باطنى جہاد يا ظاہرى جہاد!!‏

  • 30 ستمبر 2018
باطنى جہاد يا  ظاہرى جہاد!!‏

              الله تعالى نے  مسلمانوں  كو دو  قسم كے جہادوں كى اطلاع دى ہے۔ ايك ظاہرى اور ايك باطنى، باطنى جہاد  سے مراد نفس وخواہش، انسانى  طبيعت اور شيطان سے لڑنا ، معصيتوں اور لغزشوں سے توبہ كرنا، اس توبہ پر قائم رہنا اور شہوتوں اور حرام چيزوں كا ترك كرنا ہےاور ظاہرى جہاد  سے مراد  ميدانِ جنگ ميں دشمنوں كا  ہر ممكنہ وسيلہ سےمقابلہ كرنا ہے ،پس جہاد باطن جہاد ظاہر سے زياده سخت اور مشكل ہے ۔ اس لئے كہ وه ہر وقت اور باربار كا جہاد ہے اور جہاد ظاہر سے زياده  كيوں نہ ہو جب كہ وه نام ہے تمام الفت ورغبت والى حرام چيزوں كے قطع كرنے كا اور ان كے چهوڑنے كا اور شريعت كے جملہ احكام بجالانے اور تمام ممنوعات سے باز رہنے كا۔  

              جہاد باطنى آسان عمل ہرگز نہيں ہے، اس قسم كے جہاد  ميں بہت سى چيزيں شامل ہيں جس كے ذريعہ انسان اپنے خالق اور خود اپنے آپ كے سامنے يہ ثابت كرتا ہے كہ وه اپنے رب كى خوشنودى كے لئے اپنى راحت اور آرام كو باآسانى قربان كرنے كے لئے تيار ہے  يہاں تك كہ وہ  دوسروں كے لئے وہى چاہتا ہے جو اپنے لئے چاہتا اور پسند كرتا ہے ۔ نبىؐ نے فرمايا ہے كہ "مومن كا ايمان كامل نہيں ہوتا جب تك وه اپنے مسلمان بهائى كے لئے وہى نہ چاہے جو اپنے نفس كے لئے چاہتا ہے۔"

              جس شخص نے دونوں جہادوں كے متعلق الله كے حكم كى تعميل كى اس كو دنيا اور آخرت دونوں جگہ انعام ملے گا۔  الله كى راه ميں  شہادت پانے والا اپنے جسم ميں لگے زخموں كے درد كو ذرا بهى محسوس نہيں كرتا ، اپنے نفس پر جہاد كرنے والے اور گناہوں سے توبہ كرنے والے شخص كے حق ميں موت ايسى ہى ہے، اور الله كےہاں اس كا درجہ بہت اعلى وبلند ہوگا.

             جہاد باطنى  كى ايك بہت  عام سى مثال  ہمارے ضرورتمند پڑوسيوں يا رشتہ داروں  كى ہر ممكنہ مالى مدد كرناہے مثال كے طور پر اگر آپ كا  پڑوسى فقير  ہے يا آپ كے كوئى  متعلقين حاجت مند ہيں اور  آپ كے  پاس اتنا مال موجود ہے جس پر زكوة واجب ہے اور آپ كو الله كے فضل وكرم سے  تجارت ميں ہر روز نفع حاصل ہوتا ہے جو دن بدن روبہ ترقى ہے اور آپ كے پاس آپ كى  ضرورت سے زياده موجود ہے تو  اس پر بهى ان كو نہ دينا ، درحقيقت ان كے فقر پر جس ميں وه مبتلا ہيں رضامند ہونا ہے ،اور يہى دعوى كمال ايمان كے كذب كى شناخت ہے۔ ليكن جب آپ كا نفس،  آپ كى خواہشات ، اور شيطان  آپ كے پيچهے لگا ہوا ہے تو بے شك خيرات كرنا ہرگز آسان نہيں ہوگا۔  ان خواہشات كو شكست دينا   ہى  وه جہاد ہے جس كے بارے ميں الله كے نبىؐ نے فرمايا كہ "يہ جہاد اكبر ہے۔" جب ہمارے نفس ہمارے قابو ميں ہوں گے اور ہم الله كى مخلوق كا احساس كرنے والے ہوں گے تو پهر ہميں الله كى مدد ونصرت حاصل ہو گى اور اگر ہم اپنے نفسوں كے مغلوب ہوں گے اور صرف جرأت وشجاعت ميں نام پانے كے لئے تلوار اٹهائيں گے تو  الله كى مدد كسى صورت ہمارے ساتھ شامل حال نہ ہو گى۔ الله رب العزت ہميں دونوں قسم كے جہاد كرنے كى توفيق عطا  فرمائے۔ آمين

Print

Please login or register to post comments.

 

شیخ الازہر USAID کے صدر سے ملاقات کے دوران: جنگوں اور نفرتوں کو روکنا دنیا کے مسائل حل کرنے کا آسان ترین طریقہ ہے

  یو ایس ایڈ کے صدر: ہم دنیا میں نفرت اور دہشت گردی کی جڑوں کے خاتمے کے لئے الازہر کے ساتھ تعاون کرنے کے خواہاں ہیں۔  گزشتہ دنوں شیخ الازہر پروفیسر ڈاکٹر احمد الطیب نے واشنگٹن میں امریکی ایجنسی برائے بین الاقوامی ترقی کے قائم مقام...

شیخ الازہر ڈاکٹر احمد الطیب”اسلامی دہشت گردی” جیسی اصطلاح کی شدید مذمت کرتے ہوئے اس کے استعمال کو جرم قرار دینے کا مطالبہ کرتے ہیں۔

     شیخ الازہر ڈاکٹر احمد الطیب نے مغربی ممالک کے بعض زمہ داران اور عہدیداروں کے “اسلامی دہشت گردی” کی اصطلاح کا استعمال کرنے کے اصرار پر شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے کہا: وہ اس بات سے بے خبر ہیں کہ اس قسم کی...

الازہر آبزرویٹری: اسپین میں دو خواتین پر حملہ ایک جارحانہ سلوک اور ایک انتہا پسند عمل ہے۔

  پچھلے ہی دنوں ہسپانوی شہر “ملاگا” میں ایک گلی میں دو مسلمان خواتین کو نفسیاتی اور جسمانی طور پر ہراساں کیا گیا جو یوروپین ممالک میں مسلمانوں کے خلاف انتہا پسند رویوں کے اضافہ کا ثبوت ہے۔   آبزرویٹری اس بات کی تصدیق...

امن و سلامتی کے عالمی دن کی مناسبت سے الازہر آبزرویٹری: امن و سلامتی انسانیت اور انسانی رشتوں کی اصل بنیاد ہے

      ہر سال اکیس ۲۱ ستمبر کو دنیا بھر میں “امن کا عالمی دن” منایا جاتا ہے، جسے اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی نے ۱۹۸۱ میں امن وسلامتی کی اہمیت اور ضرورت پر تاکید کرنے کے لئے منظور کیا تھا۔ قرآن مجید نے دسیوں برس...

123456810Last

انڈونشين علماء كونسل كے ساتھ ملاقات ميں فضيلت مآب امامِ اكبر شيخ ازہر كى علمائے امت كے درميان مصالحت اور مفاہمت كى دعوت ..
جمعرات, 12 مئی, 2016
انڈونشين علماء كونسل كے ساتھ ملاقات ميں فضيلت مآب امامِ اكبر شيخ ازہر كى علمائے امت كے درميان مصالحت اور مفاہمت كى دعوت . فضيلت مآب امامِ اكبر شيخ ازہر ڈاكٹر احمد الطيب نے اُمت مسلمہ كے علماء كے مابين مفاہمت اور روادارى كے فروغ اور تباه كن...
مغربی دنیا سے خطاب کرتے ہوئے امام اکبر کی بوندستاج (جرمنی کی قومی اسمبلی ) سے عالمی تقریر..
جمعرات, 12 مئی, 2016
مغربی دنیا سے خطاب کرتے ہوئے امام اکبر کی بوندستاج (جرمنی کی قومی اسمبلی ) سے عالمی تقریر: ہم جرمنی کی چانسلر انجیل میرکل کی نہایت قدر کرتے ہیں جنہوں نے مشرق میں ہونے والی جنگوں کی دوزخ سے پناہ مانگنے والوں کے لئے اپنے ملک کے دروازے کھولے ،...
ڈاكٹر احمد الطيب كا افريقى ملك ميں پہلا دوره
منگل, 10 مئی, 2016
 ڈاكٹر احمد الطيب كا افريقى ملك ميں  پہلا دوره  آگلے   دنوں كے دوران  فضيلت مآب امام اكبر شيخ ازہر اور مسلم علما كونسل کے سربراه پروفيسور ڈاكٹر احمد الطيب  سنيگال اور نيجريا   پر  دوره كريں...
First34568101112Last

مذہبى آزادى
  اپنے مذہب اختيار كرنے كا حق انسان كا اولين حق ہے۔ ڈاكٹر سعيد كامل معوض كہتے ہيں كہ "اسلام ميں اپنا عقيده (اختيار كرنے) كى آزادى...
منگل, 13 اکتوبر, 2020
اسلام ميں اقليتوں كےحقوق
منگل, 28 جولائی, 2020
معلمّ انسانيت
بدھ, 22 جولائی, 2020
اسلام دین رحمت ہے
منگل, 7 جولائی, 2020
123456810Last

دہشت گردى كے خاتمے ميں ذرائع ابلاغ كا كردار‏
                   دہشت گردى اس زيادتى  كا  نام  ہے جو  افراد يا ...
جمعه, 22 فروری, 2019
اسلام ميں مساوات
جمعرات, 21 فروری, 2019
دہشت گردى ايك الميہ
پير, 11 فروری, 2019
123456810Last